Urdu Poetry : ZINDAGI KI TAREEKH │ MUNEER AHMAD FIRDAUS │ Hindi Poetry │ Lafz Kabhi Marte Nahi

Poem: Zindagi Chehra Mangti Hei
Poet: Muneer Ahmad Firdaus
Voice: M.Usman Ali
آج زندگی کی تاریخ تھی
اور وہ اس کے سامنے چیخ رہی تھی
جس نے آنکھوں پر سیاہ پٹی باندھ رکھی تھی
''اب میں بے چہرہ کیسے جیوں؟
میں نے تو اپنا چہرہ کاٹ کاٹ کر
بے چہرہ نسلوں میں بانٹ دیا
میری کور چشمی گواہ ہے
کہ میں نے اپنے سبھی منظر
بے منظر آنکھوں کو دے دئے
میری تمام خواہشیں نئی نسل نے بیچ کر
اپنی آرزوئیں خرید لیں

Leave a Reply